درجہ بندی برائے معاشی آزادی میں پاکستان بھارت سے آگے

 تحریر: ولی زاہد

ترجمہ: محمد علی شیخ

موقر ترین امریکی تھنک ٹینک ’دی ہیریٹیج فائونڈیشن‘ کی جاری کردہ درجہ بندی برائے معاشی آزادی دو ہزار سترہ کے مطابق پاکستان معاشی ترقی میں بھارت کو پیچھے چھوڑ رہا ہے۔

سو میں سے باون اعشاریہ آٹھ شمار کےساتھ پاکستان کی درجہ بندی ایک سو اکتالیس ہے۔ جب کہ باون اعشاریہ چھ شمار کے ساتھ بھارت کی درجہ بندی ایک سو ترالیس ہے۔

دونوں ممالک کو ’بیشترغیرآزاد‘ گروپ میں رکھا گیا ہے۔

Clip: Watch Wali Zahid on BOL TV live discussing 2017 Index of Economic Freedom

The bright side of Pakistan economy

Harvard predicts Pakistan GDP to grow by 5% over next 10 years

Pakistan is the world’s fastest-growing Muslim economy: The Economist

Pakistan’s unprecedented successes in stock market

Shanghai Cooperation Organisation admits Pakistan as member this year

Pakistan GDP set to grow by 5.3% by 2020: IMF

$10B TAPI natural gas pipeline to be operational in 2020

Pakistan petrol prices 18th lowest in the world

Pakistan is now world’s 40th largest economy

Worried about Pakistan’s $73B debt? You must see this

In a corruption-riddled world, Pakistan is better than one-third countries: TI

Pakistan among top 10 global improvers in World Bank’s 2017 Doing Business rankings

It’s the economy, stupid

English version: Pakistan beats India in economic freedom ranking

دوہزار تیرہ سے اب تک پاکستان کی درجہ بندی دو اعشاریہ تین جبکہ بھارت کی درجہ بندی دو اعشاریہ چھ کم ہوئی ہے۔

معاشی خودمختاری درجہ بندی دنیا کے ممالک کو بارہ اقسام میں تقسیم کرکے تخمینہ کی جاتی ہے۔

امسال کل ایک سو اسی ممالک کی درجہ بندی کی گئ ہے۔

آزاد‘ گروپ میں رکھے جا نے والے پانچ ممالک میں سے چار براعظم ایشیاء سے ہیں، جن کی تفصیل مندرجہ زیل ہے

ہانگ کانگ ۔ نواسی اعشاریہ آٹھ

سنگاپور ۔ اٹھاسی اعشاریہ چھ

نیوزی لینڈ ۔ تراسی اعشاریہ سات

سوئزرلینڈ ۔ اکیاسی اعشاریہ پانچ

آسٹریلیا ۔ اکیاسی ۔

جنوبی ایشیائی ممالک میں افغانستان (ایک سو تریسٹھ)، مالدیپ (ایک سو ستاون) اور میانمار (ایک سو چھیالیس) درجہ بندی کے ساتھ بھارت سے پیچھے ہیں۔

بھوٹان (ایک سو سات)، سری لنکا (ایک سو بارہ)، نیپال (ایک سو پچیس)، بنگلہ دیش (ایک سو اٹھائیس) اور پاکستان (ایک سواکتالیس) درجہ بندی کے ساتھ بھارت سے بہتر ہیں۔

Have you seen CPEC & OBOR stories on this blog?

CPEC fact sheet: 2013-2017

16 CPEC projects in Balochistan, 8 in KPK: Chinese Embassy

Chinese Embassy shares progress on CPEC projects

3 false reports about CPEC in one day far too many?

40 CPEC projects in 4 photos & 60 seconds

CPEC gets 4-layer security as Gwadar to be weapon-free

China’s world-reshaping One Belt, One Road (OBOR)

درجہ بندی کی مندرجہ زیل ذیلی اقسام میں پاکستان بھارت سے بہتر ہے۔

(سرکاری اخراجات: پاکستان (ستاسی اعشاریہ تین) ۔ بھارت (ستتر اعشاریہ چار

(خودمختاری برائے کاروبار: پاکستان (اکسٹھ اعشاریہ دو) ۔ بھارت (باون اعشاریہ آٹھ

(مالیاتی صحت: پاکستان (تیس اعشاریہ آٹھ) ۔ بھارت (گیارہ

آزادی برائے سرمایہ کاری: پاکستان (پچپن) ۔ بھارت (چالیس) ۔

Understanding Pakistan Series

What to expect in Pakistan in 2017

Back to the future: Pakistan in 2050

Wali on Pakistan of future

Long Term Orientation in Pakistan: from Zero to 50 in 2 years

Pakistani culture through 6-D Model

Native languages in Pakistan

How future oriented are we?

How we messed up Pakistan: A series by Wali

Pakistan’s two value crimes no one talks about

Is Whatsapp your source of info? Welcome to Project Ignorance

پانچ معیشتیں ’آزاد‘ (شمار اسی یا زیادہ)، ستاسی معیشتیں ’زیادہ تر آزاد‘ (شمار ستر سے اناسی اعشاریہ نو) یا ’میانوی آزاد‘ (شمار ساٹھ سے انتتہر اعشاریہ نو) درجہ بندی پر ہیں۔ معاشی ’غیر آزاد‘ معیشتیں بدستور تعداد میں زیادہ ہیں ۔ پینسٹھ ممالک ’زیادہ تر غیر آزاد‘ (شمار پچاس سے انسٹھ اعشاریہ نو) جبکہ تیئس ممالک ’محدود‘ (شمار پچاس سے کم) درجہ بندی پر ہیں۔

انیس سو پچانوے میں آغاذ کرنے والی یہ درجہ بندی، معاشی خودمختاری پر اثر انداز ہونے والے ان چار عوامل پر بحث کرتی ھے۔

(قانون کی حکمرانی (مالکانہ حقوق، حکومتی سالمیت، عدالتی اثر انگیزی

(حکومتی حدود ابعاد ۔ (حکومتی اخراجات، بارِ محصولات، مالیاتی صحت

انضباطی استعداد ۔ (آزادی برائے کاروبار، آزادی برائے محنت کش افرادی قوت، آزادی برائے نظام زر

(قابل رسائی منڈیاں۔ (آزادی برائے تجارت، آزادی برائے سرمایہ کاری، مالیاتی آزادی

Pakistan’s travel infrastructure

Mass-transit transport in urban Pakistan starting to get a facelift

Multan gets its Metro bus service

Take a Metro bus from Pindi to Islamabad and pay 20¢

Lahore awaits its Orange Line Metro Train

e-ticketing on Green Line train from Islamabad to Karachi

Karachi to get Green Line bus service by end-2017

Karachi may have Yellow Line bus service in 2 years

بارہ ذیلی اقسام میں شامل ہیں۔

مالکانہ حقوق

عدالتی اثر انگیزی

حکومتی سالمیت

بارِ محصولات

حکومتی اخراجات

مالیاتی صحت

آزادی برائے کاروبار

آزادی برائے محنت کش افرادی قوت

آزادی برائے نظام زر

آزادی برائے تجارت

آزادی برائے سرمایہ کاری

مالیاتی آزادی ۔

مترجم محمد علی شیخ بینکنگ کے پیشہ ور تربیت کار ہیں۔

Also by Muhammad Ali Sheikh:

دنیا بدعنوان مگر پاکستان ایک تہائی ممالک سے بہتر۔ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل

پاکستان کی معیشت کے بارے میں 17 پیش گوئیاں

پاکستان 2017 میں تیز ترین ترقی کرنے والا مسلم ملک ہو گا۔ دی اکانومسٹ

There are currently no comments.